SHARE
Patna: President Pranab Mukherjee being welcomed by Bihar Chief Minister Nitish Kumar with Governor Ram Nath Kovind on his arrival at Patna airport on Monday April 03, 2017 Photo/Aftab Alam Siddiqui

بھاگلپور، 03 اپریل(یو این آئی)صدر پرنب مکھرجی نے وکرم شیلا مھاویھار کی تاریخی و تہذیبی اہمیت پر زور دیتے ہوئے آج کہا کہ اسے ایک اعلی سطحی یونیورسٹی بنانے کی ضرورت ہے ۔ مسٹر مکھرجی نے ضلع کے کھلگا¶ں ڈویژن کے انتیچک گا¶ں واقع وکرم شیلا مھاویھار کا جائزہ لینے کے بعد ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس مھاویھار کو تیار کرنے کے لئے وہ مرکزی حکومت سے بات کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ ایک وقت تھا جب یہ مھاویھار قدیم ہندوستان کا ایک اہم تعلیمی مرکز تھا، جہاں درس و تدریس اور تحقیق کے لئے ملک و بیرون ملک سے طلبہ اور اساتذہ آتے تھے ۔صدر نے کہا کہ قدیم دور میں ہندوستان میں اعلی تعلیم کے لئے بادشاہوں نے متعدد تعلیمی مراکز قائم کئے تھے جن میں تکشیلا (پاکستان) کے علاوہ بہار میں نالندہ اور وکرم شیلا یونیورسٹی شامل ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ان مقامات پر محکمہ آثار قدیمہ نے بہت کام کیا ہے ۔مسٹر مکھرجی نے کہا کہ ان کے وزیر خارجہ کی مدت کے دوران انہوں نے پاکستان واقع تکشیلا اور بہار کے نالندہ یونیورسٹی کا دورہ کیا تھا۔ اس دوران جاپان اور سنگاپور کے تعاون سے نالندہ یونیورسٹی کی ترقی کے لئے بہت کام کئے گئے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی خواہش وکرم شیلا مھاویھار کو دیکھنے اور سمجھنے کی تھی، جو آج پوری ہو گئی۔ صدر نے کہا کہ وکرم شیلا مھاویھار فی الحال صرف میوزیم تک محدود ہے اور اس کی ترقی نہیں ہو سکی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ یہاں ایک اعلی سطحی یونیورسٹی بنانے کی ضرورت ہے اور وہ اس کے لئے مرکزی حکومت سے بات کریں گے ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے اسکل ڈولپمنٹ کے وزیر مملکت (آزادانہ چارج) راجیو پرتاپ روڑی نے کہا کہ وکرم شیلا مھاویھار کی تاریخی اور ثقافتی ورثے کی ترقی اور اسے محفوظ کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس مھاویھار کو ترقی دینے کے لئے مرکزی حکومت کوشش کر رہی ہے ۔ تقریب سے جھارکھنڈ میں گوڈہ کے ممبر پارلیمنٹ نشی کانت دوبے ، بھاگلپور کے ایم پی شیلیش کمار، بہار کے وزیر آبی وسائل راجیو رنجن سنگھ عرف للن سنگھ اور سابق مرکزی وزیر شاہنواز حسین نے بھی خطاب کیا۔ اس موقع پر گورنر رام ناتھ کووند اور مقامی ممبر اسمبلی اور کانگریس کے سینئر لیڈر سدانند سنگھ بھی موجود تھے ۔