SHARE

میامی، 02 اپریل (یو این آئی ) برطانیہ کی جوھانا کونٹا نے ناقابل یقین کارکردگی جاری رکھتے ہوئے سابق نمبر ایک کیرولین ووزنیاک¸ کو خواتین کے سنگلز فائنل میں شکست دے کر کیریئر کا سب سے بڑا میامی اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کا خطاب اپنے نام کر لیا ہے ۔کونٹا نے سنگلز فائنل میں ڈنمارک کی کھلاڑی کو مسلسل سیٹوں میں 6۔4 ،6۔3 سے شکست دی اور کیریئر کا سب سے بڑا خطاب حاصل کر لیا۔کونٹا کا کیریئر میں یہ دوسرا پریمیئر مینڈیٹر¸ فائنل تھا۔اس سے پہلے وہ چائنا اوپن میں رنر اپ رہی تھیں۔پانچ بار کی ومبلڈن چمپئن اور سابق نمبر ون امریکہ کی وینس ولیمز اور موجودہ نمبر ایک جرمنی کی انجلک کربر کو شکست دے کر فائنل میں پہنچی کونٹا نے ووزنیاک¸ کے خلاف کمال کا مظاہرہ کیا اور 33 ونرس لگائے اور صرف 19 بے جا بھولیں کیں اور ایک گھنٹے 35 منٹ میں ہی خطاب اپنے نام کر لیا۔کونٹا نے جیت کے بعد خوشی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ کیرولن جیسی کھلاڑی کے خلاف میچ کھیلنا اور مسلسل سیٹ میں جیت درج کرنا میرے لئے بہت اہم رہا۔میں صرف فائنل میں اچھی کارکردگی کرنا چاہتی تھی اور میں نے اپنی طے حکمت عملی کو لاگو بھی کیا۔10 ویں سیڈ کونٹا نے ووزنیاک¸ کے خلاف اچھی شروعات کی اور پہلے گیم میں ان کی سروس بریک کی۔اس کے بعد دو بار یو ایس اوپن فائنلسٹ نے واپسی کی۔اگرچہ کونٹا نے پھر دو بار بریک حاصل کیا اور نویں گیم میں ووزنیاک¸ کی سروس بریک کی جبکہ حریف کھلاڑی آخری وقت میں دو ڈبل فالٹ کر بیٹھیں۔برطانوی کھلاڑی نے 46 منٹ میں ہی پہلا سیٹ جیت لیا۔دوسرا سیٹ بھی اسی انداز میں کونٹا نے شروع کیا اور چھٹی بار ملے موقع کو بھناتے ہوئے انہوں نے سابق نمبر ایک کھلاڑی کی سروس بریک کر دی۔دونوں کے درمیان پہلا گیم کافی دیر تک چلا۔ووزنیاک¸ نے اس کے بعد دونوں گیم جیتے اور برتری حاصل کرلی۔لیکن پھر چھٹے گیم میں کونٹا نے واپسی کی اور آخری گیم مسلسل جیتتے ہوئے سیٹ اور میچ اپنے نام کر کیریئر کی سب سے بڑی جیت درج کر لی۔برطانوی کھلاڑی کو اس جیت کی بدولت درجہ بندی میں بھی فائدہ مل گیا ہے اور وہ کیریئر کی بہترین ساتویں درجہ بندی پر پہنچ گئی ہیں۔یہ ان کے کیریئر کا تیسرا ڈبلیوٹی اے خطاب ہے ۔ وہیں ووزنیاک¸ دنیا کی سرفہرست 10 کھلاڑیوں کے زمرے سے فی الحال باہر ہی رہیں گی۔ووزنیاک¸ نے میچ کے بعد کہا کہ گزشتہ دو ہفتوں میں میں بہت اچھا نہیں کھیل پائی ہوں۔ لیکن یہ سفر اچھا رھامیں سال کے ان ابتدائی ٹورنامنٹوں سے کافی سیکھوں گ¸ اور آگے آنے والے وقت میں اپنے کھیل میں اور بہتری کروں گی۔