SHARE

نئی دہلی۔31 مارچ(ےو اےن اےن )خبردار،ہوشیار۔۔(آج)’اپریل فول“ہے،،بے وقوف بننے سے بچیں, میڈیا کے موجودہ دور میں جبکہ دنیا ایک گاﺅں کی شکل اختیار کر چکی ہے‘ہمارے مشر قی اور اسلامی معاشرے میں بہت سے ایسے نئے تہوار اور رسومات سرایت کر چکے ہیںجوکبھی بھی ہماری روایات کا حصہ نہیں رہے تھے،ان میںسے بعض تہواروں اور رسومات کو بہت ذوق و شوق کے ساتھ اپنایابھی جارہا ہے۔جن کے پھیلانے میں میڈیا کا کردار اہم ہے، ایرپل کی طرح ویلنٹائن ڈے بھی انہی تہواروں میں سے ایک ہے جس کا مشرقی یا اسلامی تاریخ سے کوئی تعلق نہیں ملتا،اپریل فول جسے جھوٹ کا سہارا لے کردوسروں کو بیوقوف بنا کر ہنسی مذاق اڑانے کے طور پرجانا جاتا ہے،یہ خالصتاً ایک مغربی تہوار ہے جس کی تاریخ بارے متضاد آراءپائی جاتی ہیں،ان میں سے ایک رائے یہ بھی ہے کہ1582 ءمیں فرانس کے بادشاہ چارلس چہارم نے کیلنڈر کو ازسرنو مرتب کرنے کی ٹھانی اور فرانس میں جارجیا کے کیلنڈر کو متعارف کرانا چاہا،فرانس میں سال کا پہلا ہفتہ 25 مارچ سے یکم اپریل تک منایاجاتا تھا لیکن بادشاہ نے جارجیا کی طرح یہاں بھی سال کا آغاز یکم جنوری سے شروع کرنے کا اعلان کیا،ان دنوں خبر رسائی کا نظام انتہائی سست تھا اور کئی لوگوں تک اطلاع پہنچنے میں سالوں لگ جاتے تھے،اس طرح بادشاہ کے اعلان کے باوجود بہت سے فرانسیسیوں نے سابق کیلنڈر کے مطابق یکم اپریل کو ہی نئے سال کا جشن منایا ،فرانس میں ان لوگوں کو ”فول“ کے نام سے پکارا جانے لگا،اپریل فول کے متعلق مغرب کے حوالے سے اسی طرح کیں اور بھی روایات پائی جاتی ہیں تاہم مسلمانوں کاعمومی خیال یہ ہے کہ اہلِ مغرب یہ دن انہیں بے وقوف بنانے کی یاد میں مناتے ہیں،اس کی ایک روایت یہ ہے کہ سپین پر دوبارہ قبضے کے بعد بادشاہ فرڈینیڈ کے حکم سے مسلمانوں کے خون کی ندیاں بہا دی گئیں،یکم اپریل کو بادشاہ فرڈینیڈ نے اعلان کرایا کہ سپین میں مسلمانوں کی جان محفوظ نہیں اس لئے ان کےلئے ایک نیا اسلامی ملک بسانے کا فیصلہ کیا گیا ہے،نئے ملک جانے کے خواہشمند مسلمانوں کو بحری جہازوں کے ذریعے روانہ کیا جائے گا،اس اعلان پر بہت سے مسلمان بحری جہازوں میں بیٹھ کرنئے اسلامی ملک روانہ ہوئے‘لیکن بادشاہ کے حکم پر عملے نے ان جہازوں کو بیچ سمندرمیں غرق کر دیا جبکہ عملہ چھوٹی کشتیوں کے ذریعے بچ نکلنے میں کامیاب ہو گیا، بادشاہ کی اس شرارت کی یاد میں مغربی اقوام ” اپریل فول“ مناتی ہیں،وجہ جو بھی ہو۔ ”اپریل فول“دوسروں کو بےوقوف بناکر خوش ہونے کا دن ہے، بےوقوف بنانے کے اس کھیل میں بعض لوگوں کو جان کے لالے بھی پڑ جاتے ہیںاور بعض اوقات حساس طبیعت کے لوگ جان سے بھی چلے جاتے ہیں،اس لئے خبردار،،ہوشیار،، یکم اپریل کو کہیں کوئی شرارتی شخص آپ کو بےوقوف بنانے میں کامیاب نہ ہو جائے۔